gototopgototop
We have 51 guests online

پاکستان

سانحہ ماڈل ٹاؤن، حساس اداروں نے ابتدائی تحقیقات مکمل کر لیں
Written by nasir   
Thursday, 03 July 2014 17:10

لاہور کے علاقے ماڈل ٹاؤن میں واقع منہاج سیکرٹریٹ اور پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری کے رہائش گاہ پر 17 جون کو ہونے والی پولیس گردی کے حوالے سے حساس اداروں نے اپنی رپورٹ تیار کر لی ہے۔ حساس اداروں کی جانب سے تیار کی جانے والے رپورٹ کے مطابق سانحہ ماڈل ٹاؤن میں فائرنگ کرنے والوں میں ایلیٹ فورس اور کوئیک رسپانس فورس کے اہلکار شامل تھے۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ایلیٹ فورس کے جوان ایس پی سکیورٹی سلمان کی قیادت میں ماڈل ٹاؤن پہنچے تھے۔اور فائرنگ کرنے والوں میں ایس پی ماڈل ٹاؤن کے گن مین بھی شامل تھے جبکہ دیگر فائرنگ کرنے والے اہلکاروں میں 4 ایس پیز، ڈی ایس پیز اور ایس ایچ او کے گن مین شامل ہیں جنہوں نے عوامی تحریک کے کارکنوں اور ڈاکٹر طاہرالقادری کی رہائش گاہ پر سیدھی گولیاں چلائیں۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ سیدھی فائرنگ کرنے والے اہلکاروں کی تعداد 20 سے زائد تھی۔ رپورٹ کے مطابق تمام فائرنگ بریٹا پستول، جی تھری اور ایس ایم جی کے ساتھ کی گئی۔ رپورٹ میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ پولیس لائن سے آنے والے کسی بھی اہلکار نے فائرنگ نہیں کی۔ حساس اداروں نے یہ رپورٹ آئند ایک دو روز میں وزیراعلٰی پنجاب اور جوڈیشل کمیشن کو پیش کرنی ہے۔

 

FORM_HEADER


FORM_CAPTCHA
FORM_CAPTCHA_REFRESH