gototopgototop
We have 26 guests online

پاکستان

پاکستان میں سپاہ صحابہ ایک عظیم خطرہ،کھلے عام داعش کی حمایت
Written by shiacenter   
Tuesday, 08 July 2014 13:58

گزشتہ دنوں کراچی میں سپاہ صحابہ کے لیڈر اورنگزیب فاروقی نے کھلم کھلا داعش کے حمایت اور بیعت کا اعلان کیا تھا۔یہ حمایت پاکستان کے لیے ایک عظیم خطرہ بن کر سامنے آئے گی۔


گزشتہ دنوں کراچی میں سپاہ صحابہ کے لیڈر اورنگزیب فاروقی نے کھلم کھلا داعش کے حمایت اور بیعت کا اعلان کیا تھا۔ معلوم ہوتاہے کہ سپاہ صحابہ بنوں میں بھی موجود ہیں جنہوں نے محسن قوم قائد اعظم کے خلاف جبکہ عراقی دہشت گرد تنظیم داعش کے حمایت میں وال چاکنگ کی گئی ہے۔

بنوں میں سپاہ صحابہ کی طرف سے داعش دہشت گرد گروہ کے خلیفہ ابوبکر البغدادی کی حمایت میں وال چاکنگ کی گئی۔ تفصیلات کے مطابق ڈی آئی خان کے علاقہ بنوں میں داعش دہشت گردوں کے نامزد کردہ خلیفہ ابوبکر البغدادی کی حمایت میں وال چاکنگ کی گئی۔ اور ان کی عظمت کو سلام کہا گیا ہے۔ اور قائد اعظم محمد علی جناح کے خلاف بھی نعرے درج کیے گئے ہیں۔ گزشتہ دنوں کراچی میں سپاہ صحابہ کے لیڈر اورنگزیب فاروقی نے کھلم کھلا داعش کے حمایت اور بیعت کا اعلان کیا تھا۔ معلوم ہوتاہے کہ سپاہ صحابہ بنوں میں بھی موجود ہیں جنہوں نے محسن قوم قائد اعظم کے خلاف جبکہ عراقی دہشت گرد تنظیم داعش کے حمایت میں وال چاکنگ کی گئی ہے۔ یہی پاکستان دشمن عناصر ہیں جنہوں نے نہ پہلے پاکستان کو تسلیم کیا تھا اور آج بھی ملک پاکستان میں رہتے ہوئے ملک کی بنیادوں کو نقصان پہنچا رہے ہیں۔ اور حقیقت میں یہی باغی گروہ ہے جو ملک دشمن اور اسلام دشمن ہیں۔

سپاہ صحابہ ویسے بھی عام طور پر نہ تو اہلسنت کو دوست رکھتے ہیں اور نہ ہی شیعت کے زندہ رہنے کے قائل ہیں اگر اسی طرح ان کی داعش کی کھلم کھلا حمایت جاری رہی تو یہ ملک طالبان کی دہشت گردی کے بعد عراق اور سوریہ کی طرح بد ترین دہشت گردی کے مرکز میں تبدیل ہو جائے گا کہ جو ایک لمحہ فکریہ ہے کہ جس کی طرف حکومت کو ابھی سے توجہ دینی چاہیے وگرنہ اس دہشت گرد تنظیم کے قوت پکڑتے ہی ان پر کنٹرول کرنا مشکل ہو جائے گا ،جیسا کہ کچھ دنوں پہلے ہی دہشت گرد گروہ نے پاکستان کو اپنا اگلا ہدف قرار دے کر اس ملک میں اپنی تیاری اور پوشیدہ مقاصد سے اس ملک کی حکومت اور عوام کو آگاہ کردیا ہے۔

 

 

FORM_HEADER


FORM_CAPTCHA
FORM_CAPTCHA_REFRESH